Wohi qissay hain ,wohi baat purani apni


Wohi qissay hain ,wohi baat purani apni
Kon sunta hai bhala ram kahani apni

Har sitamger ko ye hamdard samajh leti hai,
Kitni khush-feham hai kambakht jawani apni,

Roz miltay hain darechay mein naye phool mujhe,
Chorrh jata hai koi roz nishaani apni

Dushmano’n se hi gham-e-dil ka madawa mange’n
Dosto’n ne tou koi baat na maani apni

Aaj phir chand ufaq per nahin ubhra Mohsin
Aaj phir raat na guzrey gi suhaani apni

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s