Qurbat bhi nahi dil se utar bhi nahi jata


Qurbat bhi nahi dil se utar bhi nahi jata
wo shakhs koi faisla kar bhi nahi jata

Dil ko teri chaahat pe bharosa bhi bahut hai
aur tujhse bichhaR janae ka dar bhi nahi jata

Aankhein hain ke khali nahi rehti hain Lahu se
aur zakhm-e-judaai hai ke bhar bhi nahi jata

Wo rahat-e-jaaN hai magar is dar badari mein
aisa hai ke ab dhyaan udhar bhi nahi jata

Hum dohri aziyyat ke gariftaar musafir
paaon bhi hain shull shauq-e-safar bhi nahi jata

Paagal huye jate ho Faraz us se mile kya
itni si khushi se koi mar bhi nahi jata

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s