Uzr aane mein bhi hai aur bulaate bhi nahin


Uzr aane mein bhi hai aur bulaate bhi nahin
Baa’is-e-tark-e-mulaaqaat bataate bhi nahin

Khoob parda hai ke chilman se lage baithe hain
Saaf chupte bhi nahi saamane aate bhi nahin

Ho chuka qata ta’lluq toh jafaayen kyon hon
Jinko matalab nahin rahataa hai woh sataate bhi nahin

Zeest se tang ho ae Daagh toh jeetey kyon hon
Jaan pyari bhi nahin jaan se jaate bhi nahin

Daagh Dehlvi

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s